انبیاء کرام علیہم الصلوۃ والسلام: 4 قسط

نبوت کیاہے: (گزشتہ سے پیوستہ)

#سوال: غیر مادی علم کی تیسری قسم وحی ہے اور انبیاء(کرام علیہم الصلوٰۃ والسلام) کے اللہ تعالیٰ سے رابطہ کا ایک بڑا ذریعہ وحی ہے۔ وحی کا مفہوم بیان کردیجئے؟

#جواب: وحی کے معنی ہیں اپنے لبوں کو ہلائے بغیر مخفی طور پر اپنے دلی منشاء کو دوسرے پر ظاہر کردینا۔ لیکن شریعت اسلامیہ میں اس سے مراد اللہ تعالیٰ کا اپنے خاص بندوں کو مخفی ذریعہ سے اطلاع دیناہے۔ روحانی ذرائع علوم میں سب سے آخر میں وحی کا مقام ہے۔ انبیاء(کرام علیہم الصلوٰۃ والسلام) کےلیے ان تینوں ذرائع کا علم یقینی ہے لیکن غیر انبیاء کےلئے ظنی ہے۔ (القرآن۔ المفردات۔ قرآن حکیم انسائیکلوپیڈیا)

#سوال: وحی کی دو اقسام ہیں وحی متلو اور وحی غیر متلو۔ ان دونوں کی وضاحت کریں؟

#جواب: وحی کے ذریعے حاصل ہونے والا علم یا پیغام نبی یا تو انہی الفاظ میں لوگوں تک پہنچاتے ہے جن میں وہ نازل ہوا یا پھر اس علم کو اپنے الفاظ میں لوگوں کے سامنے پیش کرتےہیں۔ پہلی قسم کو قرآن اور دوسری قسم کو سنت کہاجاتاہے۔ اصول کی کتابوں میں پہلی قسم کو وحی متلو اور دوسری قسم کو وحی غیر متلو کہتے ہیں۔ یعنی قرآن اس وحی کا نام ہے جس کی تلاوت کی جاتی ہے اور سنت اس وحی کو کہتےہیں جس کی باقاعدہ تلاوت نہیں کی جاتی۔ یعنی قرآن وحی حقیقی اور سنت وحی غیر حقیقی ہے۔ (المفردات۔ علوم القرآن۔ قرآن حکیم انسائیکلوپیڈیا)

#سوال: مفسرین علماء اور سیرت نگاروں نے وحی کی کون سی صورت بیان کی ہیں؟

#جواب: علامہ ابن القیم۔ علامہ عینی، علامہ راغب اور بہت سے دوسرے مفسرین ومؤرخین نے قرآن واحادیث کے روشنی میں وحی کی مندرجہ ذیل دس صورتیں بیان کی ہیں:

  1. رویائے صادقہ یعنی نبی کو سچے خوابوں کی صورت میں کسی بات کا علم ہوتاہے۔ جیسے حضورﷺ کو نبوت سے پہلے سچے خواب آتےتھے۔
  2. القاء فی القلب۔ نبی کے دل میں کوئی بات ڈال دی جائے۔ حضورﷺ کو متعدد مرتبہ اس طرح وحی کی گئی۔
  3. تمثیل۔ فرشتے کا انسانی شکل میں آکر نبی کو اللہ کا پیغام پہنچانا۔ جیسے جبرئیل ایک صحابی وحیہ کلبیؓ کی شکل میں آتے تھے۔
  4. صلصلۃ الجرس۔ گھنٹی کی آواز کی طرح پیغام سنائی دینا۔ حضورﷺ پر اکثر اس انداز میں بھی وحی نازل ہوتی تھی۔
  5. فرشتے کا اصلی صورت میں نظر آنا اور اللہ کا پیغام لانا۔ حضرت جبرئیلؑ کو آپ(ﷺ) نے دومرتبہ اصلی صورت میں دیکھا۔
  6. الله تعالیٰ کا آسمانوں سے وحی کرنا۔ جیسے شب معراج میں اللہ تعالیٰ نے رسول اکرمﷺ سے کلام کیا۔
  7. الله تعالیٰ سے بلاواسطہ کلام کرنا۔ جس طرح شب معراج میں حضورﷺ سے باتیں ہوئیں۔ حضرت موسیٰ (علیہ السلام) کلام الہٰی۔
  8. اللہ تعالیٰ کا کسی نبی سے بغیر حجاب کے خطاب کرنا۔ جیسا کہاجاتا ہے کہ معراج میں بھی حضورﷺ سے بغیر حجاب کے خطاب ہوا.
  9. کتابت کے ذریعے وحی فرمانا۔ جیسے موسیٰ (علیہ السلام) کو توریت لکھی ہوئی (تختیوں پر) ملی تھی۔
  10. تفہیم غیبی۔ اللہ تعالیٰ کوئی بات نبی کے دل وذہن میں ڈال دیتاہے۔ جیسے دین کا فہم عطا کردینا۔

(زادالمعاد۔ مدارج السالکین۔ فتح الباری۔ النبوات۔ ترمذی۔ بخاری۔ تفسیر ابن کثیر۔ مظہری۔ خازن)

جاری قسط نمبر 5

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.