میگنیچیوڈ

اگر آپ کا چوکیدار آپ سے کہے کہ صاحب میں نے بہت مہنگا فون خریدا ہے، تو یقیناً آپ بآسانی اندازہ لگا لیں گے کہ اٹھارہ، بیس ہزار تنخواہ لینے والا شخص پانچ سات ہزار کے فون کو مہنگا سمجھ رہا ہوگا.

لیکن اس کے برعکس اگر آپ کا کوئی کروڑ پتی دوست کہے کہ اس نے ایک مہنگا فون خریدا ہے… تو فوراً آپ کے ذہن میں آئے گا کہ یقیناً لاکھ سے اوپر ہوگا…..

اسی طرح اگر کوئی معیشت دان آسمان دیکھ کر اندازہ لگا رہا ہو کہ آج بارش کا امکان ہے تو آپ اس کی بات کو اتنا سنجیدہ نہیں لیں گے جتنا کسی ماہر موسمیات کی پیش گوئی کو لیں گے کہ جس کو اس بارے میں زیادہ اور درست معلومات ہوسکتی ہیں.

اب سوچیں اگر کہنے والا خدائے بزرگ و برتر خود ہو کہ بلاتشدید و تکبیر سب سے بڑا ہے اور بہت ہی بڑا ہے اور ہر ہر چیز کا بہت ہی درست اور کامل علم رکھنے والا ہے اور کہہ یہ رہا ہو کہ ‘جہنم بہت ہی برا ٹھکانہ ہے’ اور پھر بار بار کہہ رہا، زور دیکر کہہ رہا ہو تو ہمیں یقیناً چند ساعت نکال کر، تنہائی میں بیٹھ کر اس کے میگنیچیوڈ کا اندازہ ضرور کرنا چاہیئے۔

اللہ کریم سب انسانوں کو جہنم سے بچائے…(آمین)

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.